45 YEARS MONEY 1 TON CASH DEPOSIT BANK

0
183
45 YEARS MONEY 1 TON CASH DEPOSIT BANK
Elevated view of the White House mail room emplyees as they sort dimes in the post during the Fight Infantile Paralysis Campaign, Washington DC, January 28, 1944. (Photo by PhotoQuest/Getty Images)

ایک ٹن کا کیش جمع کروانے, بنک میں پہنچنے والا شخص

45 YEARS MONEY 1 TON CASH DEPOSIT BANK عرصہ 45سال تک جمع ہونے والے 1 ٹن کیش، ایک ساتھ بنک میں لے کر آنے والا شخص،کیش مشین گننے والی ۔۔۔۔

اپ سب حیران ہونگے کہ اتنے سکوں کا آخر ڈیپوزٹ کرنے والا شخص کون تھا اور اخر اس کے پاس اتنے سکے آئے کہاں سے۔

امریکہ کے ایک نجی بینک میں ایک70 سالہ شخص اینڈریس ایک چھوٹے ٹرک پر پانی کی 15 بڑی بوتلیں لے کر پہنچتا ہے۔ مگر سب یہ دیکھ کر حیرت ذدہ رہ جاتے ہیں کہ یہ پانی سے نہیں بلکے سکوں سے بھری ہوئی ہیں۔ مگر اس شخص کو اندازہ تھا کہ بینک والے بھی اس بات کو ہضم نہ کرسکیں گے اس لئے اس نے ان کو پہلے ہی خبردار کردیا تھا کہ وہ فلاں تاریخ کو اپنے اس انوکھے ڈیپوزٹ کے ساتھ آئے گا۔

70 سالہ شخص نے بتایا کہ اس کو یہ جمع کرتے ہوئے 45 سال لگے۔

45 YEARS MONEY 1 TON CASH DEPOSIT BANK

بات کھلنے پہ آئی تو پتا چلا کہ اصل میں بہت سال پہلے اس شخص کو ایک سکہ ملا ۔ اس نے اس کو خدا کی رحمت سمجھا اور یوں سکے جمع کرنا شروع کردئے۔ اینڈرس کا کہنا تھا کہ اس کا ایک اور دوست بھی اس کی اس کام میں مدد کرتا ہے ۔ اور وہ دونوں ایک دوسرے سے سکے ایکسینج بھی کرلیتے تھے۔ جب آہستہ آہستہ اس شخص کے عزیز و اقارب کو اس کے اس شوق کا پتہ چلا تو وہ بھی اینڈرس کو سکے لا دیتے تھے۔ پر اس کے مطابق وہ ان کو اس کے پیسے دیتا تھا۔

45 YEARS MONEY 1 TON CASH DEPOSIT IN BANK

اس کا یہ شوق جنون کی حد تک پہنچ گیا ۔ جس کا کوئی مول نہ تھا۔ 1970 میں جب امریکہ میں سکوں کی شارٹز ہوئی تو حکومت نے اعلان کیا کہ اگر کوئی شخص 100 ڈالر کے برابر سکے لا کے دے تو اسے 25 ڈالر بطور انعام دیا جائے گا۔ مگر اس شخص نے اپنے شوق پر سمجھوتہ نہیں  کیا۔لیکن قسمت کو کچھ اور ہی منظور تھا۔ اسی دوران اس نے اپنے مکان کی انشورنس کروائی۔

لیکن انشورنس کمپنی نے مکان میں موجود سکوں کی ذمہ داری لینے سے انکار کردیا۔

تب اینڈرس کو مجبوراً یہ سکے بینک میں ڈیپوزٹ کروانے پڑے

45 YEARS MONEY 1 TON CASH DEPOSIT BANK

بہرحال سکے تو بینک میں پہنچ گئے۔ مگر اب اصل امتحان بینک والو کا تھا جب بوتلوں کو کھولا گیا تو اس کا کل وزن 1270 کلو بنا۔ اب ان کو ہاتھ سے گننے میں تو مدت لگنی تھی۔ وہ تو قسمت کہ ان کے پاس سکے گننےوالی مشینیں موجود تھیں۔ایک سےزائد مشینیں استعمال کرتے ہوئے بھی۔ ان سکوں کو گننے میں 5 گھنٹے لگے۔۔ کیوں کہ ہر 20 منٹ بعد کوائن مشین کا بیگ بدلنا پڑتا تھا۔

اب اینڈرس کو اس کی 45 سالہ محنت کا بدلہ ملا۔

جو کہ 5 ہزار ایک سو چھتیس اشاریہ چار چھ ڈالر کے برابر بنی۔

ایسے شوق کا کوئی مول نہیں

2015 میں بی بی سی کی رپورٹ کے مطابق ایک شخص نے سکے جمع کر کے کار خریدی تھی۔

مزید طنزوح مزاح سے بھرپور تحریرات  جن   پڑھ کر ضرور  آپکا موڈ خوشگوار ہوگا

جب بارش آتا ہے تو پانی آتا ہے اور جب ذیادہ بارش۔۔۔۔۔۔

http://7knows.com/article/1164/jab-barish-hoti-hai-to-pani-ata-ha/

کرونا وائرس سے پاکستانیوں کی جنگ اور جوابی وار

http://7knows.com/article/1450/coronavirus-se-pakistanion-ki-dushmani-aor-jawabi-war/

دیسی الیکٹریشن جس کی کمال مہارت درد سر

http://7knows.com/article/791/desi-electricity/

پاکستانی مریض ایک پرکشش تجربہ گاہ

http://7knows.com/article/681/pakistani-patient-an-attractive-laboratory/

لاہوری ریکارڈ بنانے سے محروم

http://7knows.com/article/681/pakistani-patient-an-attractive-laboratory/

لال بیگ اور دھماکہ خیز مواد

http://7knows.com/article/810/the-use-of-explosives-to-breed-red-bags/

تصاویر کو مزید دلکش بنانے کے لیے 7 ایپس

http://7knows.com/article/788/7-apps-to-make-photos-more-attractive/

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں